ارب پتی بننے کی عمر کون سی ہوتی ہے، راز کی بات جان لیں

sample-ad

عبداللہ بن زبیر
وہ 28 اکتوبر 1955 کو پیدا ہوا اور محض 20 سال کی عمر میں اس نے ایک کمپنی کی بنیاد رکھ دی، محض چند سالوں میں ترقی کے مینار چھو لئے، اور آج اس کی کمپنی پوری دنیا میں سروسز دے رہی ہے اور اس کی دولت میں روزانہ ملین ڈالرز کا اضافہ ہورہا ہے۔
وہ 14 مئی 1984 کو پیدا ہوا اور اپنی تعلیم کے دوران ہی 2004 میں اس نے ایک کمپنی کی بنیاد رکھ دی اور پھر دیکھتے ہی دیکھتے دنیا میں تہلکہ مچا دیا۔۔ اس وقت اس کے ملازمین کی تعداد ہزاروں میں ہے اور اس کی روزانہ کی آمدنی 6 کروڑ روپے ہے جبکہ ابھی تک اس کی عمر صرف 32 سال ہے۔
اس کی پیدائش اکتوبر 1955 کی ہے اور محض 21 سال کی عمر میں اس نے کمپنی کی بنیاد رکھی اور چند سالوں میں وہ ارب پتی بن گیا، اور اس وقت اس کی کمپنی اربوں میں کھیل رہی ہے۔۔
اب یہ آپ پہ منحصر ہے کہ ان لوگوں کے بارے میں مزید تحقیق کریں کہ وہ کون لوگ ہیں؟؟ ہو سکتا ہے اعداد وشمار میں 19، 20 کا فرق ہو مگر سوچنا یہ ہے کہ 19، 20 اور 21 سال کی عمر میں ان لوگوں نے کمپنیوں کی بنیادیں رکھ دی اور چند سالوں میں ہی اپنی کمپنیوں کو شہرت اور دولت کی معراج پہ لا بٹھایا اور نہایت افسوس کے ساتھ کہنا پڑ رہا ہے کہ ہمارے ہاں 35 سال کے بعد یہ سوچا جاتا ہے کہ کیا کرنا چاہئے اور کیا نہیں؟؟ بزنس کی دنیا میں سب سے زیادہ وقت کی قدر کی جاتی ہے تبھی بزنس پروان چڑھتا ہے۔۔